KANAVAL | Leah Gordon | Archive

KANAVAL: Vodou, politics and revolution on the streets of Haiti
An Exhibition by Leah Gordon at Ort Gallery Birmingham 

Opening 10th September 2014, 5-7pm
Artist Talk with Leah Gordon 8th October, 6.30pm
Chris Sutton talk about the Balsall Heath Carnival Wednesday 22nd October, 6pm
Exhibition ran until 25th October

Ort Gallery is delighted to present “KANAVAL: Vodou, politics and revolution on the streets of Haiti” an exhibition by Leah Gordon. 

with thanks to Marcin Sz for the above images.

Artist Talk by Leah Gordon on Wednesday 8th October 2014

Gordon is a photographer, film-maker and curator who has, in recent years, produced a considerable body of work on the representational boundaries between art, religion, anthropology, colonialism and folk history. The photographs in this exhibition, taken from her recent publication of the same name, document the pre-Lenten Mardi Gras Festivities in Jacmel, a coastal town in Southern Haiti. Her photographs register Haiti’s juncture between its history, its cosmology and the present. Gordon’s images document troupes of ‘performers’ acting out mythological and political tales in a whorish theatre of the absurd that course the streets unshackled by traditional parade. Light years away from the sanitised corporate-sponsored tourist parades of carnival throughout the world, the images reveal an event that is a potent vessel for transmitting, telling, retelling and reinterpreting Haitian history.

Leah Gordon has been recording the masks and of Jacmel’s carnival for the last sixteen years on a 50 year old Roleiicord twin lens reflex camera. In a calmer, more tranquil, times she has met with the carnival performers and collected the stories behind the masks. These are stories of complex Vodou rituals, ancestral memories, political satire and personal revelations. The lives of the indigenous Taino Indians, the Slave’s Revolt and state corruption, are all played out using drama and costume on Jacmel’s streets. The photographs will be accompanied by recordings of readings of the oral histories presented in the voice of the community of Hyson Green, a neighbourhood in Nottingham with strong similarities to Balsall Heath. The exhibition is a touring exhibition curated by New Art Exchange based in Hyson Green. 

Furthering these cultural links and creating a crossover between Haitian and local traditions, a small  part of the gallery will show a documentation of the Balsall Heath Carnival from July 2014. The carnival has run every year since 1976 and celebrates diversity, community cohesion and the neighbourhood itself. This part of the exhibition will document this year’s festivities through photography, artefacts and voice recordings.

10696426_492410310887871_6517299085494134930_n

1902858_492410354221200_4053439483230631793_n

Gordon’s film and photographic work has been exhibited internationally including the National Portrait Gallery, UK; Parc de la Villette, Paris; the Museum of Contemporary Art, Sydney and the Dakar Biennial. Her photography book ‘KANAVAL: Vodou, Politics and Revolution on the Streets of Haiti’ was published in June 2010. Leah Gordon is the co-director of the Ghetto Biennale in Port-au-Prince, Haiti, was the adjunct curator for the Haitian Pavilion at the 54th Venice Biennale in 2011, was the co-curator, with Alex Farquharson, of ‘Kafou: Haiti, History & Art’, at the Nottingham Contemporary.

KANAVAL: Vodou, politics and revolution on the streets of Haiti  is a touring exhibition curated by New Art Exchange (NAE), Nottingham.
We regret that the gallery is only accessible through stairs we are working on making the building more accessible.

KANAVAL Poster

کانوال:ہیٹی کی سڑکوں پر   وودو، سیاست اور  انقلاب
اورٹ گیلری برمنگھم میں لیِ گورڈن کی  نمائش

۱۰ ستمبر سے شروع
 ۸ اکتوبر کو لیی گورڈن سے فنکارانہ بات چیت
نمائش ۲۵ اکتوبر تک جاری

لیی گورڈن ایک فوٹوگرافر، فلمساز اور ناظم  عجائب خانہ ہے، جس نے حالیہ سالوں میں فن، مذ ہب، انسانیات، مستعمری اور لوک تاریخ میں نمایاں کام کیا ہے۔ جو تصاویر اس نمائش میں ہیں وہ اسی نام کی اس کی حالیہ اشاعت پری لینٹن ماردی گراس فیسٹول ان  جیکمل سے لی گئی ہیں،جو جنوبی ہیٹی کا ساحلی علاقہ ہے۔ان کی تصاویر میں ہیٹی کا اس کی تاریخ، تکونیات اور حال کے درمیان ملاپ کا اندراج ہے۔گورڈن کی تصاویر میں اداکاروں کے طائفہ کو دیو مالائی اور سیاسی کہانیوں کو زنا کاری کے لغو ناٹک کے ذریعے ادا کرتے ہوئے بتایا ہے۔ جس سے سڑکیں روایتی نمائش کی پابندیوں آزاد ہوتی ہیں۔پوری دنیا میں رائج  سیاحوں کے سفری تماشے اور جشن کے معقول اجتماعی ضامنوں سے بہت پہلے، یہ تصاویر ایک واقعہ بتاتی ہیں جس میں ایک قوی برتن   ترسیل، بیان، دوہرانا اورپھر اضافی مفہوم کے ساتھ  ہیٹی کی تاریخ بتاتا ہے۔

لیی گورڈن پچھلے سو لہ سالوں سے جیکمل کے سفری تماشے اور نقاب ایک ۵۰ سالہ رولی کورڈ ٹوئن لینز ریفلکس کیمرہ پر ریکارڈ کر رہی ہے۔ پر سکون اور زیادہ خاموش اوقات میں وہ سفری تماشوں کے اداکاروں سے ملی ہے اور نقابوں کے پیچھے کی کہانیاں جمع کی ہیں۔یہ کہانیاں پیچیدہ مذہبی رسومات، آبائی یادیں، سیاسی طنزیہ نظمیں اور ذاتی انکشافات پر مبنی ہیں۔ مقامی ٹائینو انڈین، غلاموں کا باغی ہونا اور ریاستی بد عملی، یہ سب ڈرامہ اور پوشاک کے ذریعے جیکمل کی سڑکوں پر دیکھایا جاتا ہے۔تصاویر کے ساتھ زبانی تاریخ کے پڑھنے کی ریکارڈنگ بھی ہوگی جو کہ این اے ای  کے قریبی رکن کی آواز میں پیش کی گئی ہے۔ان ثقافتی رابطوں اور ہیٹی اور برطانیہ کے ہم عصر  NAE آرٹ کے درمیان ایک راستہ بنانے کے ساتھ کانوال کی تصاویر ، ہیٹی کے فنکار آندرے ایوجن، کے فن پاروں کے مقابل  ملا کر رکھی جائیں گی، جو جریمی ڈیلر کے ۲۰۰۵ کے نامزد ‘ لوک دفتر’ کو استعمال میں لائے گا۔ایوجن فوری طور پر ایک وودو قربان گاہ ‘لوک دفتر’ میں رکھے ۲۸۰ اوزاروں سے تشکیل دے گا جو برطانیہ کے  ہم عصر لوک فن کی سرسری تصویر کی نمائندگی کرے گی، اور برطانیہ اور ہیٹی  کی لوک روایات کے درمیان ہم آہنگی پیدا کرے  گا۔

لیی گورڈن کے بارے میں

لیی گورڈن ایک فوٹو گرافر، فلمساز اور ناظم  عجائب خانہ ہے، جس نےحالیہ سالوں میں فن، مذہب، انسانیات، مستعمری اور لوک تاریخ  کی نمائندہ حدود میں نمایاں کام کیا ہے۔۲۰۰۶ میں اسے   ہیٹی سے گرانڈ ریو اسکلپٹر نے اسے ایک ‘آزادی کا مجسمہ’ لیور پول کے بین الاقوامی غلامی کےعجائب خانے میں مستقل نمائش میں  رکھنے کیلئے، بنانے پر فائز کیا گیا  اور ۲۰۰۸ میں اس نے فلم ‘ اٹس-ریسسٹنز: دی سکلپٹرز آف گرانڈ ریو’ مکمل کی۔ اس نے اپنا تعلق گرانڈ ریو کے فنکاروں سے قائم رکھا۔ گورڈن  نےدسمبر ۲۰۰۹ میں گہٹو بینانائل کو منظم کیا اور اس کی ساتھی سرپرست رہی۔وہ حالیہ طور پر  مختلف  منصوبوں جیسے فلمسازی، فوٹوگرافی  یا ناظم عجائب خانہ میں ملوث رہی ہے، بشمول ان فلموں کے، جن میں لندن میں ہم جنس پرستوں سے خوف کے تجربات، مستعمراتی وراثت اور میپوٹو میں عجائب گھر اور غلامی کے کاروبار اور دریائے تھیمز کے درمیان رابطہ، بتائے گئے ہیں۔اس کی تصاویر کی کتاب ” کانوال: ہیٹی کی سڑکوں پر وودو، سیاست  اور انقلاب” جون ۲۰۱۰ میں شائع کی گئی جبکہ اس کی فوٹوگرافی کا سولو شو  رائفل میکر گیلری میں دکھایا گیا۔ گورڈن اس وقت ۵۴ ویں وینس بینا نائل پر فرسٹ ہیٹین پولین اور  فولر میوزیم میں ہیٹین فن کا ایک اہم یو ایس شو ” ان ایکسٹریمسٹ” کی سرپرستوں کی ٹیم میں شامل ہے۔ 
USLA, Los Angeles
 

کانوال:ہیٹی کی سڑکوں پر وودو، سیاست اور انقلاب’ ایک سفری نمائش ہے جو کہ   نیو آرٹ ایکسچینج ، نوٹینگھم        منظم کردہ ہے۔New Art Exchange (NAE), Nottingham

ہمیں افسوس ہے کہ گیلری کی طرف رسائی صرف سیڑھیوں سے ممکن ہے۔ ہم عمارت کو مزید قابل رسائی بنانے کیلئے کام کر رہے ہیں۔

www.ortgallery.co.uk      www.leahgordon.co.uk      www.ghettobiennale.org      www.nae.org.uk